28 Feb, 2024 | 18 Shaban, 1445 AH

Question #: 2950

April 26, 2022

Agar sehri ko band hoe 3mints guzar chuke hon aur daant Mai panse hoe khurak ka zarra nigal jaae TU roza toot jaata hai?agar haan TU qazaa kaisay Kate.

Answer #: 2950

اگر سحری بند ہوئے تین منٹ گزر چکے ہوں اور دانت میں پھنسی ہوئی خوراک کا ذرہ نگل جائے تو روزہ ٹوٹ جاتا ہے؟ اگر ہاں تو قضا  کیسے  کریں؟

الجواب حامدا ومصلیا

روزے  کی حالت میں روزہ یاد ہونے کی صورت میں اگر دانتوں میں پھنسی ہوئی   چیز   اگرچنے کے دانے کے برابر  یا اس سے زیادہ ہو اور وہ حلق میں اتر گئی یا خود اس کو نگل لیا تو اس سے روزہ فاسد ہوجائے گا، اگر چنے کے دانے سے کم ہو تو اس سے روزہ فاسد نہیں ہوگا، البتہ خود اس کو حلق میں اتارا تو یہ مکروہ ہے۔

اور اگر دانتوں میں پھنسی ہوئی چیز منہ سے باہر نکال کر پھر اس کو دوبارہ حلق میں اتار لیا تو اس سے روزہ فاسد ہوجائے گا خواہ، چنے کے دانے کے برابر ہو یا اس سے کم ہو، قضا لازم ہوگی، کفارہ لازم نہیں ہوگا۔

اگر روزہ یاد نہ ہو  اور بھول کر ایسا کرلیا تو روزہ فاسد نہیں ہوگا۔

الفتاوى الهندية (1/ 202):

وإن أكل ما بين أسنانه لم يفسد إن كان قليلا وإن كان كثيرا يفسد، والحمصة وما فوقها كثير، وما دونها قليل، وإن أخرجه، وأخذه بيده ثم أكل ينبغي أن يفسد كذا في الكافي، وفي الكفارة أقاويل قال الفقيه - رحمه الله تعالى -: والأصح أنه لاتجب الكفارة كذا في الخلاصة.

والله اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق غَفَرَاللہُ لَہٗ

دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ